Blog Archives

لباس


♣ لباس ♣

ایک سہانی صبح
سرہانے مرجھایا پھول دیکھا
ملال گھیرتے وقت
ہوا نے بتایا
یہ کل رات تک کِھلا تھا
صرف ایک رات کے سفر سے ہار گیا
میرا دل اس خیال سے دھڑکا
راتوں کا سفر بہت ہلاکت خیز ہوتا ہے
پھول بدن کو اٹھاکر
باغیچے کی کیاری کی مٹی پر
کسی کتبے کی طرح رکھا
پلٹتے سمے
ایک پھول نے مسکراکرکہا
ملول مت ہو
میری مسکراہٹ مستعار لے لو
تازہ دم ہوکر
امید کا نیا لباس پہن لو

 

Libas

Ak suhani subh
Sarhanay murjhaya phool dekha
Malaal ghairtay waqt
Hawa nay bataya
Ye kal raat tak khila tha
Sirf ak raat k safar say haar gaya
Mera dil is khayal say dhaRka
Raton ka safar bohot halakat khaiz hota hay
Phool badan ko utha kar
Bagheechay ki kiyari ki mitti par
Kisi kutbay ki tarah rakha
Palat’tay samay
Aik phool nay muskura kar kaha
Malool mat ho
Meri muskurahat musta’ar lelo
Taza dam hokar
Umeed ka naya libas pehen lo

ہمارے درمیاں


Picture it and write

ہمارے درمیاں

تم

تنگ و تاریک اور شکستہ گلی سے
روز گزر تے ہو
اور سورج تلے جلتی
اُسی پرانی بستی میں جانکلتے ہو
تمھاری زندگی
اسی انتہائی تجربے پر موقوف ہے
اور میں اس امید پر جیتا ہوں
کہ ایک دن تم
اپنے وجود کے اندر دور تک بچھی
کالی پگڈنڈی کو
کسی روشن خیال سے اُجال دوگے

Hamaray darmiyaN

Tum
Tang-o-taareek aor shikasta gali say
Roz guzartay ho
Aor sooraj talay jalti
Osi purani bastii main jaa nikaltay ho
Tumhari zindagi
Isi intihayi tajarbay par moqoof hay
Aor main is umeed par jeeta hoN
K aek din tum
Apnay wajood k andar door tak bichii
Kaali pagdandii ko
Kisi roshan Khayal say ujaal dogay!

%d bloggers like this: